صحت

خشک پھل: آپ کی صحت کے لئے اچھا ہے یا برا؟

Dried Fruits

خشک پھل جسم کے لئے ضروری غذائی اجزاء جیسے فائبر اور پوٹاشیم کا ایک اچھا ذریعہ ہیں ، لیکن زیادہ تر لوگ ان پر توجہ نہیں دیتے ہیں۔

ان میں جیو بیکٹیو اجزاء جیسے پولیفینولس اور کیروٹین شامل ہیں جو جسم کو اضافی طبی فوائد فراہم کرتے ہیں۔

تحقیقی اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ خشک پھل کھانے سے دل کی بیماری ، کینسر اور ٹائپ ٹو ذیابیطس کا خطرہ کم ہوسکتا ہے۔

اگر پھل کھانا مشکل ہے تو زیادہ خشک میوہ جات کا استعمال آسان اور مزیدار حل ہے۔

خشک میوہ جات تازہ پھلوں کے مقابلے میں سارا سال دستیاب ہوتے ہیں ، انہیں محفوظ کرنا بھی آسان ہوتا ہے اور اسے متبادل کے طور پر بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔

پنسلوانیا (پین) اسٹیٹ یونیورسٹی کے مطالعے میں خشک میوہ جات کے استعمال کے اثرات کا جائزہ لیا گیا۔

تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ جو لوگ خشک میوہ جات کھانے کے عادی ہیں وہ زیادہ اہم غذائی اجزاء جذب کرتے ہیں ، جن میں فائبر اور پوٹاشیم شامل ہیں ، لیکن وہ زیادہ کیلوری بھی جلا دیتے ہیں۔

محققین کا کہنا ہے کہ خشک میوہ جات بہترین اجزاء کا ایک اچھا ذریعہ ہیں ، لیکن لوگ اس بات کو یقینی بنانا چاہتے ہیں کہ ان میں شوگر نہ ہو۔

انہوں نے مزید کہا کہ مقدار کا خیال رکھنا بھی ضروری ہے کیونکہ وہ تازہ پھلوں سے چھوٹے ہیں کیونکہ پانی نکالا جاتا ہے ، لیکن اس سے زیادہ کھانا ممکن ہے۔

یہ انکشافات اکیڈمی آف نیوٹریشن اینڈ ذیابیطس کے میڈیکل جریدے جرنل میں شائع ہوئے تھے۔

اس تحقیق میں 2007 اور 2016 کے درمیان غذائی سروے کے دوران جمع 25،000 سے زائد افراد کے اعداد و شمار کا تجزیہ کیا گیا تھا۔

ان میں سے 3.7٪ پھل کھانے کے عادی تھے ، جبکہ 1233 نے خشک میوہ جات کے استعمال کی اطلاع دی ہے۔

محققین نے ان کی صحت ، جسمانی وزن ، کمر کے سائز اور بلڈ پریشر سے متعلق اعداد و شمار کو بھی دیکھا۔

نتائج سے معلوم ہوا کہ جو لوگ خشک میوہ جات کھانے کے عادی تھے ان کی صحت مند غذا ، جسمانی وزن کم ، کمر کا سائز کم اور بلڈ پریشر کی سطح ہے۔

محققین کا کہنا ہے کہ جو لوگ خشک میوہ جات کھاتے ہیں وہ زیادہ جسمانی توانائی استعمال کرتے ہیں اور اس طرح اضافی کیلوری کی تلافی کرتے ہیں۔

تحقیق میں کہا گیا ہے کہ جسمانی وزن کم ہونا اس بات کی نشاندہی کرتا ہے کہ یہ افراد جسمانی طور پر زیادہ متحرک ہیں۔

Dont Miss Next