پاکستان

مسلم لیگ ن کے رہنما حمزہ شہباز جیل سے رہا ہوئے

hamza-sharif

لاہور ۔پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف اور مسلم لیگ (ن) کے مرکزی نائب صدر حمزہ شہباز کو کوٹ لکھپت جیل سے ضمانت پر رہا کردیا گیا۔

اس سے قبل احتساب عدالت نے حمزہ شہباز کو بغیر کسی معاملے سے زائد اثاثوں میں رہا کرنے کا حکم دیا تھا۔ احتساب عدالت میں ڈیوٹی جج اکمل خان کے سامنے حمزہ شہباز کی ضمانت کیلئے ضمانت کے بانڈز جمع کرائے گئے۔ یہ بانڈ ادریس بھٹی اور عدیل نے جمع کروائے جبکہ چوہدری مسعود اختر ان کے بطور امدادی پیش ہوئے۔

عدالت نے برقرار رکھا کہ لاہور ہائیکورٹ نے حمزہ شہباز کی ضمانت منظور کرلی۔ حمزہ شہباز کے ضمانت کے مچلکے جمع کرائے گئے ہیں جو منظور ہیں۔ اگر حمزہ شہباز کسی اور مقدمے میں مطلوب نہیں ہیں تو انھیں رہا کردیا جائے جبکہ حمزہ شہباز 4 مارچ کو کیس کی سماعت کے موقع پر پیشی میں حاضر ہوں گے۔

ادھر مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حمزہ شہباز مجھ جیسے پارٹی کارکن ہیں ، ہم دونوں پارٹی کی خدمت کریں گے ، حمزہ شہباز نے بہادری سے جھوٹا مقدمہ لڑا۔ انہوں نے مزید کہا کہ حمزہ شہباز کو غیر منصفانہ طور پر 2 سال قید کی گئی۔

انہوں نے کہا کہ معاملات حزب اختلاف کے لانگ مارچ میں نہیں آسکتے ہیں اور انہوں نے یہ کہتے ہوئے مسترد کردیا کہ اگر عمران خان کو پیکنگ بھیجا گیا تو اقتدار میں واپس آنے میں کوئی تبدیلی ہے۔

ڈسکہ کے ضمنی انتخابات کے بارے میں بات کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ تحریک انصاف اب دوبارہ انتخاب سے بھاگ رہی ہے کیونکہ ان کی دھاندلی بے نقاب ہوگئی ہے۔

Dont Miss Next