پاکستان

دنیا سے مقبوضہ جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں پر توجہ دینے کی اپیل

Shah Mehmood Qureshi

اسلام آباد – وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے عالمی برادری پر زور دیا ہے کہ وہ غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین اور صریح خلاف ورزیوں پر توجہ دیں۔

وہ جمعرات کے روز اسلام آباد میں منعقدہ فوٹو گرافی اور ثقافتی نمائش سے خطاب کر رہے تھے تاکہ کشمیریوں کے حق خودارادیت کے حقدارانہ جدوجہد میں ان کی لچک کو خراج تحسین پیش کریں۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ سفارتی عملے کو آزاد کشمیر اور ہندوستانی غیر قانونی مقبوضہ جموں و کشمیر کا دورہ کرنا چاہئے تاکہ زمینی حقائق کا جائزہ لیا جاسکے اور خود ہی فیصلہ کیا جائے کہ وہاں عوام کیا چاہتے ہیں۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ ہندوستانی غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں و کشمیر گذشتہ اٹھارہ ماہ کے دوران فوجی محاصرے میں ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ نئی امریکی انتظامیہ جو انسانی حقوق کے تحفظ کی بات کر رہی ہے ، غیر قانونی مقبوضہ جموں و کشمیر میں زمینی حقائق کو نظر انداز کرنا بند کردے گی۔ انہوں نے اس اعتماد کا اظہار کیا کہ او آئی سی اور یورپی یونین بھی اس سلسلے میں اپنا کردار ادا کریں گے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کشمیر بھارت کا اندرونی معاملہ نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ تنازعہ ماضی میں پاک بھارت مذاکرات کے ایجنڈے میں رہا ہے جب کہ 5 اگست 2019 کو وادی میں غیر قانونی ہندوستانی اقدامات کے تناظر میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے اس پر تین بات چیت کی ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان اس تنازعہ کو بات چیت اور پرامن آداب کے ذریعہ حل کرنا چاہتا ہے کیونکہ اس کا کوئی فوجی حل نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان نے ماحول کو خراب نہیں کیا اور جس نے یہ کیا اس کو مشغولیت کے لئے ماحول بنانے کی ضرورت ہے۔

وزیر اطلاعات و نشریات شبلی فراز نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ کشمیر زمین پر آسمان ہے لیکن بھارت نے اپنی وحشیانہ کارروائیوں کے ذریعہ اسے جہنم میں بدل دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جب تک وہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق ان کا حق خودارادیت حاصل نہیں کرتے تب تک ان کے کشمیری بھائیوں اور بہنوں کے ساتھ کھڑا رہے گا۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ وزیر اعظم عمران خان نے تمام فورمز پر مسئلہ کشمیر کو زبردستی اٹھایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان کوششوں کا کوئی دھیان نہیں لیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عالمی برادری کو کشمیری عوام کے حقوق غصب کرنے کے ليے ہندوستانی ناجائز خواہشات اور برے منصوبوں کا جائزہ لینا چاہئے۔

صدر آزادکشمیر سردار مسعود خان نے کہا کہ ہندوستان نے غیر قانونی مقبوضہ جموں و کشمیر میں ثقافتی یلغار کا آغاز کیا ہے۔ مساجد ، مزارات اور کشمیری عوام کی زبان پر وادی میں حملہ آور ہے۔ انہوں نے کہا کہ مظلوم کشمیری عوام کی حالت زار کو اجاگر کرنے کے لئے فوٹو گرافی اور ثقافتی نمائش کا انعقاد بہت بروقت ہے۔

Dont Miss Next